عباس Dec 4
تم کو معلوم سہی , مجھ کو تو معلوم نہیں درد جب لطف کی منزل سے , گزر جاتا ھے نہ دلاسوں سے بہلتا ھے , تڑپتا ھُوا دل نہ نگاھوں کو کسی طور , قرار آتا ھے.