Twitter | Search | |
PAT
Official Twitter Account of Pakistan Awami Tehreek. PAT is a political party of Pakistan working for democratic political values in the country.
10,434
Tweets
17
Following
103,675
Followers
Tweets
PAT 7h
جب سے سانحہ ماڈل ٹاؤن میں بے گناہوں کا خون بہا، شریف خاندان کے عبرتناک انجام کا آغاز ہو گیا، ابھی یہ آغاز ہے اسکی انتہا باقی ہے: سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT 7h
ملکی اداروں اور عوام کے جان و مال اور خون پسینے کی کمائی سے کھیلنے والے عبرت ناک انجام سے دوچار ہونگے۔ آج آدھا شریف خاندان نیب اور احتساب عدالتوں کے پاس اور آدھا مفرور ہے: سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT 7h
جس باپ کی اولاد باپ سے مخلص نہ ہو اس باپ کو یہ حق پہنچتا ہے کہ وہ کرپشن پر جاری ٹرائل اور سزاؤں کی ذمہ داری ریاستی ادارے پر ڈالے؟ سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT 9h
قومی مجرم سے اسکا بھی حساب لیا جائے۔ نوازشریف کا یہ کہنا کہ اسمبلی میں خطاب میری نہیں بیٹے کی دی گئی معلومات پر تھا تو کیا اس کا مطلب یہ ہے کہ بیٹے نے باپ کو غلط معلومات دیں اور انہیں پھنسایا؟ سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT 9h
ملکی تاریخ کا یہ واحد کرپشن کیس ہے جس میں اولاد کرپشن کی ذمہ داری باپ پر اورباپ اولاد پر ڈالتا ہے، قوم جاننا چاہتی ہے سوا کروڑ روپے اثاثوں کا مالک مغل بادشاہوں کی طرح زندگی کیسے گزارتا ہے؟ سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT 9h
نوازشریف کی کرپشن کا دفاع کرنیوالے ترجمان انحراف کے بعد ن لیگ چھوڑ دیں، چور کو سعد ثابت کرنے پر توانائیاں خرچ کیں اور قوم کے سامنے ڈھٹائی سے جھوٹ بولتے رہے، اسی مجرمانہ رویے کی وجہ سے ’’سارا ٹبر چور ہے‘‘ کے نعرے نے محاورے کی شکل اختیار کی: سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT 9h
قطری خط کو منی ٹریل کے طور پر پیش کرنے اور اس کے دفاع میں زمین آسمان کے قلابے ملانے والے طلال، نہال، دانیال سمیت شریف خاندان کے جملہ ترجمانوں میں رتی برابر بھی شرم ہے تو قوم سے معافی مانگ کر شریف خاندان سے ہمیشہ کیلئے قطع تعلق ہو جائیں: سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT 9h
قطری خط اور قومی اسمبلی میں دئیے گئے پالیسی بیان سے انحراف سے ثابت ہو گیا نوازشریف کے پاس لندن فلیٹس اور کمپنیوں کی کوئی منی ٹریل نہیں ہے: سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT Nov 14
اگر سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس کی فیئر تفتیش ہو جائے اور پھر فیئر ٹرائل کے آئینی تقاضے پورے کر دئیے جائیں تو پھر عدالت جو فیصلہ بھی کرے گی اسے قبول کرینگے: سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT Nov 14
سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس کے فیصلے سے ہی پاکستان کے عوام کو یہ اعتماد حاصل ہو گا کہ اب کوئی طاقتور طاقت کے نشے میں کسی کمزور اور بے گناہ کی جان نہیں لے سکتا، ورثاء فیئر تفتیش چاہتے ہیں، فیئر تفتیش کے بغیر فیئر ٹرائل ناممکن ہے: سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT Nov 14
پاکستان کے عوام سانحہ ماڈل ٹاؤن کے قتل عام کے ذمہ داروں کو کیفر کردار تک پہنچتا ہوا دیکھنا چاہتے ہیں، رات کے اندھیرے میں ہونے والے جرائم کے فیصلے بھی ہونے چاہئیں لیکن دن دہاڑے ہونے والے قتل عام کے ملزمان کا کیفر کردارتک پہنچنا قانون کی بالادستی کیلئے ضروری ہے: سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT Nov 14
چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے تنزیلہ امجد شہیدکی بیٹی بسمہ امجد کی درخواست پر سانحہ ماڈل ٹاؤن کی ازسرنو تحقیقات کیلئے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم بنانے کی درخواست بھی سنی اور اس پر پنجاب حکومت کو نوٹس بھی جاری کررکھاہے جسکی تاریخ ملنے اور سماعت کیے جانے کے ہم منتظر ہیں: سیکرٹری جنرلPAT
Reply Retweet Like
PAT Nov 14
شہدائے ماڈل ٹاؤن کے ورثاء چیف جسٹس کے ممنون ہیں کہ جنہوں نے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر شہدائے ماڈل ٹاؤن کے ورثاء کی درخواست پر نوٹس لیا اورنوٹس کے نتیجے میں اس کیس کے ٹرائل میں باقاعدگی آئی، تاہم ازسرنو تفتیش کا قانونی مرحلہ طے کرنا باقی ہے: سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT Nov 14
ماڈل ٹاؤن میں قتل عام کی گواہ کروڑوں آنکھیں ہیں جنہوں نے دن دہاڑے معصوم خواتین، بچوں، بوڑھوں، نوجوانوں کی خون میں لت پت تڑپتی لاشیں دیکھیں اور ان چہروں کو بھی دیکھا جو ان پر گولیاں برسارہے تھے، محب وطن عوام قاتلوں کو سزائیں ملتے بھی دیکھنا چاہتے ہیں: سیکرٹری جنرل PAT
Reply Retweet Like
PAT Nov 14
جو مقدمات شروع کیے ہیں وہ نمٹا کر ہی جاؤں گا:چیف جسٹس سپریم کورٹ امید ہے چیف جسٹس سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس بھی نمٹا کر جائینگے، شہدائے ماڈل ٹاؤن کے ورثاء انصاف کیلئے سپریم کورٹ کی طرف دیکھ رہے ہیں: خرم نواز گنڈاپور
Reply Retweet Like
PAT Nov 11
100خاندانوں کو خون کے آنسو رلایا گیا مگر کسی نے قاتلوں کو سزا دینا دور کی بات ان سے کوئی سوال و جواب بھی نہیں کیا۔ ہم حصول انصاف کے لیے قانونی جنگ لڑرہے ہیں اور آخری سانس تک یہ جنگ لڑتے رہیں گے: ڈاکٹر محمد طاہرالقادری
Reply Retweet Like
PAT Nov 11
ہمارا موقف ہے کہ ماڈل ٹاؤن میں پولیس آئی نہیں بھیجی گئی تھی، پولیس افسران 100لوگوں کو گولیوں سے چھلنی کرنے کا ازخود فیصلہ نہیں کرسکتے تھے، انکے پیچھے کوئی طاقت تھی جو انہیں ظلم وبربریت پر اکسارہی تھی اوروہ طاقت شریف برادران اور انکے اقتدار کی تھی: ڈاکٹرطاہرالقادری
Reply Retweet Like
PAT Nov 11
سانحہ ماڈل ٹاؤن کوئی معمول کا واقعہ نہیں پوری دنیا کے میڈیا میں اس کی رپورٹنگ ہوئی اور اسے انسانی حقوق کے بدترین واقعہ کے طور پر رپورٹ کیا گیا، اس کے باوجود صورت حال یہ ہے کہ چار سال کے بعد بھی شہدائے ماڈل ٹاؤن کے ورثاء انصاف سے محروم ہیں: ڈاکٹر محمد طاہرالقادری
Reply Retweet Like
PAT Nov 11
سانحہ ماڈل ٹاؤن، حصول انصاف کے لیے چار سال قبل جہاں کھڑے تھے آج بھی وہیں کھڑے ہیں، شریف برادران کی طلبی کے لیے سپریم کورٹ میں 16 نومبر کو سماعت ہورہی ہے، سانحہ کے منصوبہ سازوں کی طلبی سے انصاف کا عمل ٹریک پر آئے گا: ڈاکٹر محمد طاہرالقادری
Reply Retweet Like
PAT retweeted
ڈاکٹر طاہرالقادری Nov 11
سانحہ ماڈل ٹاؤن کے انصاف کیلئے چار سال کا ہر دن جس تکلیف سے گزرا وہ صرف ہم جانتے ہیں، شہداء کے خون کا حساب لینا ہم پر ایک قرض اور انصاف کیلئے جدوجہد فرض ہے، سانحہ کے منصوبہ سازوں کی طلبی سے انصاف کا عمل ٹریک پر آئے گا
Reply Retweet Like